۔،۔ پی ایس پی کی قیادت عوامی توقعات پرپوراترے گی:الطاف شاہد۔،۔
٭سیّد مصطفی کمال کے سوا کوئی ملک میں احتساب کاخودکارنظام رائج نہیں کرسکتا٭

پاک سر زمین پارٹی برطانیہ کے صدر چوہدری محمد الطاف شاہدنے کہا ہے کہ سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنیوالے قابل رحم نہیں۔ کسی کواپنے نجی مفاد کیلئے قومی مفادات کوداؤپرلگا نے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ پی ایس پی کی قیادت آئندہ انتخابات میں تاریخی کامیابی کے بعد عوام کی توقعات پرپوراترے گی۔ پاک سرزمین پارٹی کے مرکزی چیئرمین سیّد مصطفی کمال کے سوا کوئی ملک میں احتساب کا خودکارنظام رائج نہیں کرسکتا۔جس طرح عوام نے2018ء کے انتخابات میں پی ایس پی کومینڈیٹ دیا تھا تاہم رات کے اندھیرے میں نقب لگائی گئی لیکن آئندہ انتخابات میں چوروں کوان کی واردات میں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ شہرقائدؒ کے پرعزم معمار سیّد مصطفی کمال اپنے تازہ دم ٹیم ممبرز کے ساتھ انتخابی میدان میں اتریں گے اوران کی کامیابی کے نتیجہ میں مایوسی کے سیاہ بادل چھٹ جائیں گے۔اپنے ایک بیان میں چوہدری محمدالطاف شاہد نے مزید کہا کہ انتخابات میں بھرپور کامیابی کے بعد پی ایس پی کی قیادت کے سنجیدہ اقدامات سے عام آدمی کی حالت زارضروربدلے گی۔معاشرے کے پسماندہ طبقات کوخاطرخواہ ریلیف کی فراہمی کیلئے سیّد مصطفی کمال کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔انہوں نے کہاکہ پی ایس پی کے منتخب نمائندے اورکارکنان عوام کی بنیادی ضروریات اورانہیں دستیاب شہری سہولیات کے معیار کابھرپور خیال رکھیں گے۔ عوام کا منتخب قیادت کے نیک ارادوں اورقومی اداروں پراعتماد بحال کرنے کیلئے سیّد مصطفی کمال کا پولیس اورپٹوارکلچر کی تبدیلی کاوعدہ ضروروفاہوگا، وہ اختیارات نچلی سطح پرمنتقلی کیلئے دوررس اصلاحات کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سیّد مصطفی کمال کی موثر سیاسی تجاویز قابل غور اورقابل عمل ہیں۔ سیّد مصطفی کمال اپنے اورعوام کے درمیان کوئی دیواریارکاوٹ برداشت نہیں کر یں گے،وہ سفیدپوش آبادیوں کوپوش آبادیوں کے مساوی شہری سہولیات کی فراہمی کیلئے اپناکلیدی کرداراداکریں گے۔