۔،۔جرمنی کے سمندری طوفان (ایملینڈے) نے پوری جرمنی کو شدید نقصان سے دو چار کیا۔نذر حسین۔،۔

٭نارتھ رائن ویسٹ فیلیا کے مشرق میں بڑے سمندری طوفان (ایملینڈے) نے پوری جرمنی کو شدید نقصان پہنچایا۔پولیس رپورٹ کے مطابق (43) افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے جبکہ (تیرہ) افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔رائن لینڈ کے ایک قصبے میں (اڑتیس) سالہ شخص بجلی کا جھٹکا لگنے سے ہلاک ہو گیا٭

شان پاکستان جرمنی فرینکفرٹ/نارتھ رائن ویسٹ فیلیا/وٹگرٹ۔ نارتھ رائن ویسٹ فیلیا کے مشرق میں نہ صرف سمندری طوفان (ایملینڈے) نے بلکہ کم از کم اُٹھنے والے تین (بگولوں۔ٹورناڈوز) نے پورے جرمنی کو شدید نقصان پہنچایا، سمندری طوفان (ایملینڈے) نے جرمنی کے شہر پیڈربورن کو بروز جمعہ بہت متاثر کیا جہاں پر پولیس کے مطابق (43) افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے جبکہ (تیرہ) افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔رائن لینڈ کے ایک قصبے میں (اڑتیس) سالہ شخص بجلی کا جھٹکا لگنے سے ہلاک ہو گیا پولیس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ رائن لینڈ کے قصبے وٹگرٹ میں اڑتیس سالہ شخص کی موت اس وقت ہوئی جب سیلاب کی صورت حال دیکھنے کے لئے تہہ خانے میں داخل ہوتے وقت بجلی کا جھٹکا لگا جس کی وجہ سے وہ گر گیا اور شاید کوئی چیز اس کے سر پر لگی جس سے اس کی موت واقع ہوئی۔ وسطی فراکونیا میں لکڑی کی ایک چھونپڑی کے گرنے سے درجنوں افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع موصول ہوئی جبکہ جرمنی کے دیگر حصّوں میں بھی سمندری طوفان (ایملینڈے)نے نقصان پہنچایا۔ جرمن ویدر سروس کے مطابق یہ تینوں تصدیق شدہ طوفان(بگولوں۔ٹورناڈوز)خاص طور پر شدید گرچ چمک کے سلسلے میں تشکیل پائے، ڈوسل ڈورف کے قریب اور ساورلینڈ سے راٹنگن میں بھی طوفان کی اطلاعات موصول ہوئیں لیکن اس کی جانچ پڑتال ابھی باقی ہے۔