۔،۔ پاکستان کی 75ویں یوم آزادی کے موقع پر قونصل خانہ فرینکفرٹ میں شاندار پرچم کشائی۔ نذر حسین۔،۔

٭قونصلیٹ جنرل آف پاکستان فرینکفرٹ میں یوم آزادی کے موقع پر اس سے پہلے اتنا بڑا کمیونٹی اجتماع نہیں دیکھا گیا، فرینکفرٹ۔ گردہ نواح بلکہ پوری جرمنی سے کمیونٹی افراد نے حصّہ لیا جبکہ خصوصی طور پر خواتین اور بچے سفید اور سبز ملبوسات میں دیکھنے کو ملے۔ خواتین نے بچوں کو خصوصی طور پر پاکستان کی 75ویں یوم آزادی کے موقع کے لئے تیار کیا اور ساتھ بھی لے کر آئیں ٭

14 اگست 2022 پاکستان کی 75 ویں یوم آزادی کے موقع پر قونصلیٹ جنرل آف پاکستان جرمنی فرینکفرٹ میں پرچم کشائی کی شاندار تقریب منعقد کی گئی نہ صرف فرینکفرٹ، گردو نواح بلکہ جرمنی کے دور دراز علاقوں سے پاکستانی کمیونٹی نے بھر پور شرکت کی جو کئی سالوں سے دیکھنے میں نہیں آیا۔ بچے سبز ہلالی رنگوں میں ملبوس لباس میں ادھر ادھر تتلیوں کی طرح اڑتے نظر آ رہے تھے۔ قونصلیٹ کے چاروں طرف صرف ایک ہی آواز گونجتی سنائی دے رہی تھی۔ جیوے جیوے جیوے پاکستان۔ پاکستان پاکستان جیوے پاکستان، پاکستان زندہ باد، پاک فوج زندہ باد۔ قائد اعظم زندہ باد، علامہ اقبال زندہ باد۔ ٹھیک گیارہ بجے ہیڈ آف چانسلری شفاعت کلیم خٹک نے سٹیج سنبھالا۔ تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا جس کا شرف اسٹاف ممبر ذوالقرنین کو ملا، قونصل جنرل آف پاکستان فرینکفرٹ زاہد حسین نے قومی ترانہ کی دھن پر جرمنی فرینکفرٹ کی فضاومیں سبز ہلالی پرچم کو بلند کیا جس پر، پاکستان زندہ باد، پاک فوج زندہ باد۔ قائد اعظم زندہ باد، علامہ اقبال زندہ باد کے نعروں سے فضاگونج اٹھی ابھی نعروں کی گونج گونج ہی رہی تھی کہ جیوے جیوے جیوے پاکستان۔ پاکستان پاکستان جیوے پاکستان، پاکستان زندہ باد، پاک فوج زندہ باد۔ قائد اعظم زندہ باد، علامہ اقبال زندہ باد کی گونج سنائی دی گئی۔ شفاعت کلیم خٹک نے وزیر خارجہ کا پیغام کمیونٹی تک پہنچایا جبکہ علی رندہاوا نے وزیر اعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان محمد شہباز شریف کا قوم کے نام پیغام کمیونٹی کو پڑھ کر سنایا جس میں ان کا کہنا تھا کہ آج کا دن پاکستانی قوم کے لئے ایک تاریخی دن ہے۔آج کے دن پوری قوم برصغیر کے مسلمانوں کو پاکستان کی 75 ویں یوم آزادی، مملکت خداداد پاکستان کے قیام کے لئے بے مثال جدوجہد پر خراج تحسین اور لازوال قربانیوں پر نذرانہ عقیدت پیش کرتی ہے۔ آئیں مل کر عہد کریں کہ ہم پاکستان کو اپنے اجداد کے نظریات کے عین مطابق ایک فلاحی ریاست بنائیں گے۔ ان کے پیغام میں پجھترویں جشن آزادی کے تاریخی دن کے موقع پر میں پوری قوم اور سمندر پار پاکستانیوں کو دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں۔پاکستان پائندہ باد۔ اس کے بعد ایک بار پھر نعروں کا سلسلہ شروع ہوا ڈاکٹر عارف علوی صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان کا آزادی کی 75 ویں سالگرہ کے موقع پر قوم کے نام پیغام قونصل جنرل آف پاکستان فرینکفرٹ زاہد حسین نے پڑھ کر اوورسیز پاکستانیوں کو سنایا۔قونصل جنرل آف پاکستان نے سب سے پہلے پوری کمیونٹی کا شکریہ ادا کیا ان کا کہنا تھا کہ یہ جوش و جذبہ دیکھ کر مجھے جرمنی میں بسنے والی کمیونٹی پر فخر ہے کہ اتنی بڑی تعداد میں کمیونٹی اس خوشی کے موقع پر قونصلیٹ میں اکٹھی ہوئی ہے۔ صدر کے پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ اس سال ہم آزادی کے ڈائمنڈ جوبلی بھی منا رہے ہیں دنیا کے کونے کونے میں مختلف تقریبات کا اہتمام کیا گیا ہے ان تقریبات کا مقصد عوام بالخصوص پاکستان کے نوجوانوں میں قومی یکجہتی، نظریہ پاکستان اور تحریک آزادی کے بارے میں شعور اجاگر کرنا ہے اس سلسلہ میں تمام اداروں کی کاوشیں لائق تحسین ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ آخر میں، میں قوم کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ملک کی تعمیر و ترقی کے لئے ثابت قدم رہتے ہوئے دلجمعی سے کام جاری رکھیں۔آج پاکستانی قوم کو در پیش معاشرتی، معاشی اور سلامتی کے مسائل سے نبرر و آزما ہونے کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ آئیئے عہد کریں کہ ہم اس وطن کے وقار، عظمت اور سربلندی کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔انشا اللہ۔ اس پر ایک بار پھر نعروں کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ شروع ہوا۔ بعد ازاں اس خوشی کے موقع پر کیک کاٹا گیا، جبکہ کمیونٹی کے لئے پرتکلف لنچ کا اہتمام کیا گیا تھا اس کے بعد ساتھ ساتھ زاہد حسین اور شفاعت کلیم خٹک کمیونٹی میں گھل مل گئے کچھ شکوے سنے کچھ سنائے۔ تقریب میں ابران مسیح اپنے ڈھول کے ساتھ آئے ہوئے تھے پھر پاکستانی نغموں کا سلسلہ شروع ہوا بچوں بڑوں اور خواتین نے ڈھول کی تھاپ پر ملی نغمے سنائے اور پروگرام کے اختتام پر (لاج میری پت رکھیو بلا جھولے لالن جندڑی دا سیون دا سخی شہباز قلندر۔دما دم مست قلندر، علی دم دم دے اندر) پر نوجوانوں اور بوڑھوں نے دھمال ڈالی۔