۔،۔اِنَا لِلّہِ وَاِنَا اِلَیہِ رَاجِعُون۔سید ثقلین نقوی اور سید حسنین نقوی سے اظہار تعزیت۔ نذر حسین۔،۔

٭پاکستان جرمن پریس کلب اور شان پاکستان کے عہدیداران اس مشکل وقت میں سید ثقلین نقوی اور سید حسنین نقوی کی والدہ گرامی پاکستان میں قضائے الہی سے اپنے رب سے ملاقات کے لئے چل پڑی ہیں کی وفات پر ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں،ہماری دعا ہے کہ اللہ کریم اپنے پیارے حبیب حضرت محمد ﷺ کے صدقے مرحومہ کی مغفرت اور درجات بلند فرمائیں اور لواحقین کو صبر جمیل عطاء فرمائے٭

شان پاکستان جرمنی فرینکفرٹ/پاکستان۔ پاکستان جرمن پریس کلب کے صدر سلیم پرویز بٹ اور شان پاکستان جرمنی کے ایڈیٹر ان چیف نذر حسین نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ سید ثقلین نقوی کسی تعارف کے محتاج نہیں نہ صرف فرینکفرٹ بلکہ جرمنی اور یورپ کے علاقوں میں بھی جانی پہچانی سماجی اور کاروباری شخصیت ہیں کی والدہ ماجدہ کی ناگہانی موت کی خبر ایک صدمے سے کم نہیں ہے صدمہ تو لوگ بھول جاتے ہیں یہ بہت بڑا نقصان ہے اس کی تلافی کوئی نہیں، ساری دنیا کے خزانے مل بھی جائیں تو اس کی تلافی نہیں ہو سکتی، جب کسی کی ماں مرتی ہے تو اللہ تعالی فرماتے ہیں میرے بندے جس کی وجہ سے تیرا خیال کرتا تھا وہ مر گئی اب تو اپنے عمل ٹھیک کر تا کہ میں تیرا خیال کرتا رہوں،تیرا اکرام کرتا رہوں، مائیں ایسی چیز ہیں۔ غم کی اس گھڑی اور رنج و الم کی کیفیت میں الفاظ تعزیت کا لبادہ اوڑھنے سے قاصر ہیں۔موت حضرت آدم کی میراث ہے اور ہر ذی روح نے موت کا ذائقہ چکھنا ہے، لیکن ماں وہ ہستی ہے جس کے چہرے پر ہمیشہ نور، آنکھوں میں محبت، لہجے میں مٹھاس اور قدموں تلے جنت ہے۔جس کو ایک نظر پیار سے دیکھ لینے سے ہی حج کا سا ثواب مل جاتا ہے۔ شاید اسی لئے کسی نے کہا تھا کہ۔
٭چلتی پھرتی ہوئی آنکھوں سے اذاں دیکھی ہے۔ میں نے جنت تو نہیں دیکھی ہے،ماں دیکھی ہے٭
پاکستان جرمن پریس کلب اور شان پاکستان کے عہدہداران دُعا گو ہیں کہ اللہ کریم اپنے پیارے حبیب مصطفی کے صدقے مرحومہ کو جنت الفردوس میں اعلی مقام عطاء فرمائے،سید ثقلین نقوی اور سید حسنین نقوی کو اور تمام اہل خانہ کو عظیم صدمہ برداشت کرنے کی توفیق اور ہمت عطاء فرمائے۔ اس زمانہ میں ایمان پر فوت ہو جانا بھی اللہ کریم کی بہت بڑی نعمت ہے۔